نماز کی توفیق

وہ اب مکمل سنجیدہ ہو کر سُن رہا تھا۔۔۔۔
“تم نے کلمہ طیبہ پڑھ کر خود ہی تو اللہ سے وعدہ کیا تھا کہ یا اللہ تُو ہی میرا معبود ہے۔۔ میں اب ہمیشہ تیری عبادت کروں گا۔۔ یہ اقرار نامہ بھول گئے ہو کیا؟
اب تم ہی مجھے  بتاؤ کہ میں کس منہ سے اللہ سے کہوں کہ وہ تمہیں نماز کی توفیق دے؟ جبکہ وہ تمہیں پہلے سے ہی توفیق دے چکا ہے۔۔ یعنی تم اذان سن سکتے ہو،، تمہارے پاؤں سلامت ہیں،،  ہاتھ موجود ہیں،، اللہ نے دیکھنے اور چلنے کی قوت بھی دی ہوئی ہے،، جا کر وضو کر سکتے ہو۔۔ تو پھر اور کیا توفیق دے تمہیں؟؟ اب آسمان سے فرشتے تو آنے سے رہے جو تمہیں زبردستی اُٹھا کر مسجد میں چھوڑنے جائیں گے۔”

Advertisements

One thought on “نماز کی توفیق

Your Thoughts

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out /  Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out /  Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out /  Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out /  Change )

Connecting to %s